انسانی تھوک سے منہ کے کینسر کی تشخیص ممکن

ڈائو میڈیکل کالج اور سول ہسپتال کراچی کے شعبہ ناک،کان اور حلق کے پروفیسر اقبال خیانی نے کہا ہے کہ پاکستان میں منہ کا کینسر تشویشناک حد تک بڑھ گیا ہے۔ اس کی شرح میں اضافے کی وجہ نوجوانوں کا کثرت سے اس امراض میں مبتلا ہونے کی بنیادی وجہ غیر متوازن غذاء کا استعمال کرنا، منہ کی صفائی کا فقدان اور سب سے بڑھ کر پان، چھالیہ، گ ٹکا، ماوہ، مین پوری اور تمباکو نوشی کے استعمال کا آزادانہ بڑھتا ہوا رحجان ہے۔ گذشتہ دنو ...

Read more

لعاب جیسے مادّے جو برڈ فلو وائرس کو ناکارہ بناسکتا ہے

اٹلانٹا: امریکی ماہرین نے مینڈک کے جسم میں پائے جانے والے لعاب جیسے مادّے میں ایک ایسا مرکب دریافت کرلیا ہے جو کئی اقسام کے برڈ فلو وائرس کو ناکارہ بناسکتا ہے۔ ریسرچ جرنل ’’امیونولوجی‘‘ کے تازہ شمارے میں امریکا کی ایموری یونیورسٹی (اٹلانٹا، جیورجیا) سے تعلق رکھنے والے ماہرین کا ایک مقالہ شائع ہوا ہے جس میں انہوں نے بتایا ہے کہ جنوبی بھارتی ریاست کیرالا کے جنگلات میں ٹینس کی گیند جتنا ایک رنگین مینڈک پایا جا ...

Read more

پٹنہ میں ‘موت’ کا کاروبار، کروڑوں کی جعلی ادویات برآمد، 3 گرفتار

پٹنہ میں جمعہ کو جعلی اور اےكسپايري دواسازی کی ذخیرہ برآمد ہوا ہے. پولیس نے کروڑوں کی جعلی ادویات ضبط کی ہے. عالم گنج کے بسكومان کالونی میں اےكسپايري ادویات پر جعلی لفافوں لگاتے ہوئے ایک دبوچا گیا. خفیہ معلومات کی بنیاد پر پولیس نے دارالحکومت اور اس کے آس پاس کے علاقوں میں چل رہے جعلی اےكسپايري منشیات کے دھدھےباجو کے خلاف مہم چلائی. اسی ترتیب میں دوپہر میں كدمكا تھانے کے بنگالی میدان کے قریب ایک گھر میں چھا ...

Read more

ہڈیوں کو کمزور کرنے والی وجہ سامنے آگئی

آج کے دور میں دودھ یا اس سے بنی مصنوعات پر مبنی غذا کا استعمال نہ کرنا نوجوانوں میں ہڈیوں کے امراض کا باعث بن رہا ہے۔ یہ انتباہ برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔ نیشنل اوسٹیوپروسیز سوسائٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ اٹھارہ سے 24 سال کے ہر دس میں سے چار افراد ہڈیوں کے لیے ضروری غذا جیسے دودھ سے منہ موڑے ہوئے ہیں۔ تحقیق میں بتایا گیا کہ آج کل غذا تیزی سے فیشن ایبل ہوتی جارہی ہے جس کے نتیجے میں ...

Read more

جرمنی کے ‘بڈوگ پروٹوکول’نے کینسر سے جنگ میں لکھی نئی عبارت

نئی دہلی: امریکہ اور دیگر ملکوں میں کینسر پر مسلسل ہو رہی تحقیق اور نئی ادویات کی دریافت کے باوجود نہ تو مریضوں کی تعداد کم ہو رہی ہے اور نہ ہی اموات کا سلسلہ تھم رہا ہے ۔اس کے برعکس اس بیماری کے متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔ لیکن میڈیکل سائنس کی ان ناکامیوں کے درمیان نوبل ایوارڈ کے لئے سات بار منتخب ہونے والی ڈاکٹر جوھانا بڈوگ کے متبادل علاج کے طریقہ کار سے امیدوں کی شمع جل رہی ہے اور بہت سے ز ...

Read more

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top