کئی ریاستوں میں سوائن فلو کا قہر، یوپی سمیت پانچ سو سے زائد موتیں

لکھنؤ: ان دنوں ملک کی بہت سے بڑی ریاستوں میں بھی سوائن فلوکا قہر جاری ہے۔ گجرات، مہاراشٹر اور دہلی میں سوائن فلو کی وجہ سے سیکڑوں افراد ہلاک ہو چکے ہیں. صحت کے محکمہ صحت کے مطابق، اس سال سوائن فلو کے 1032 کیسوں کو اطلاع دی گئی ہے. سرکاری اعداد و شمار کے مطابق، 32 افراد مر چکے ہیں. swine flu یو پی ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ نے جاری اعداد و شمار کے مطابق، یوپی میں سوائن فلو کے مریضوں کی تعداد 1032 تک پہنچ گئی ہے. صوبے م ...

Read more

شورکی آلودگی سے مردانہ بانجھ پن کا خطرہ

سیئول: صوتی آلودگی یعنی شور شرابے کے ماحول اور صحت پر مضر اثرات کی طویل ہوتی فہرست میں اب مردانہ بانجھ پن کا اضافہ بھی ہو گیا ہے۔ جنوبی کوریا میں سیئول یونیورسٹی کے ماہرین نے 20 سے 59 سال کی عمر کے 206492 مردوں کی تولیدی صحت کا طویل مدتی جائزہ لینے کے بعد انکشاف کیا ہے کہ وہ مرد جو زیادہ شور شرابے والے علاقوں میں رہتے ہیں ان میں تولیدی صلاحیت شدید طور پر متاثر ہوتی ہے اور وہ بانجھ بھی ہو سکتے ہیں۔ تشویش نا ...

Read more

سوشل میڈیا کازیادہ استعمال نوجوانوں کونفسیاتی مریض بنانے لگا

سوشل میڈیا کے زیادہ استعمال سے ذہنی دباؤ نوجوانوں کو نفسیاتی مریض بنانے لگا، نیند کی کمی سے نوجوانوں کی ذہنی صلاحیتیں بھی ماند پڑنے لگیں۔ رائل کالج فار پبلک ہیلتھ کی تازہ تحقیق کے مطابق ہر وقت موبائل ، ٹیبلٹ یا کمپیوٹر کی اسکرین پر جمی نظریں اور اس دوران مختلف ایپس کا استعمال نوجوانوں کے ذہنی دباؤ میں اضافے کا سبب بن رہا ہے اور اس کی وجہ سے نوجوان نسل نفسیاتی مسائل کا شکار ہورہی ہے۔ رائل کالج فار پبلک ہیل ...

Read more

ہندوستان کے شاہی باورچی خانے

جب کبھی ہندوستان کے شاہی باورچی خانوں اور ان میں تیار کیے گئے شاہی پکوانوں کا ذکر ہوتا ہے تو لکھنؤ، حیدرآباد اور رام پور ہی اس کے دائرے میں آتے ہیں۔ ہندوستان کے جنوبی حصوں کے شاہی باورچی خانوں کا ذکر شاذ و نادر ہی سننے یا پڑھنے میں آتا ہے۔ جنوبی ہند کے راجا مہاراجہ بھی شمالی ہند کے نوابوں کی طرح ہی ذائقہ دار کھانوں کے دلدادہ تھے اور ان کے شاہی باورچی خانے بھی لذیذ اور متنوع کھانوں کی تیاری میں اپنی مثال آپ ...

Read more

انسانی تھوک سے منہ کے کینسر کی تشخیص ممکن

ڈائو میڈیکل کالج اور سول ہسپتال کراچی کے شعبہ ناک،کان اور حلق کے پروفیسر اقبال خیانی نے کہا ہے کہ پاکستان میں منہ کا کینسر تشویشناک حد تک بڑھ گیا ہے۔ اس کی شرح میں اضافے کی وجہ نوجوانوں کا کثرت سے اس امراض میں مبتلا ہونے کی بنیادی وجہ غیر متوازن غذاء کا استعمال کرنا، منہ کی صفائی کا فقدان اور سب سے بڑھ کر پان، چھالیہ، گ ٹکا، ماوہ، مین پوری اور تمباکو نوشی کے استعمال کا آزادانہ بڑھتا ہوا رحجان ہے۔ گذشتہ دنو ...

Read more

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top