مودی اور شاہ پر بی جے پی رکن پارلیمنٹ شتروگن سنہا کی تنقید

نئی دہلی ۔ وزیراعظم نریندر مودی اور قومی صدر بی جے پی امیت شاہ پر ایک بار پھر تنقید کرتے ہوئے بی جے پی رکن پارلیمنٹ شتروگن سنہا نے کہا کہ ان دونوں افراد کے خلاف کچھ بھی کہنے والے کو قوم دشمن قرار دیئے جانے کا خطرہ لاحق ہے ۔ انہوں نے مودی حکومت کے وزراء کو ’’چاپلوسوں کا ٹولہ‘‘ قرار دیا اور کہا کہ ان میں سے 90 فیصد کو عوام جانتے ہی نہیں ہے ۔ اداکار سے سیاستداں بننے والے شتروگن سنہا نے حکومت اور قومی صدر کو تن ...

Read more

رامپور میں راج ببر کا اعظم کے خلاف تقریر کرنے سے انکار

رامپور: ضلع میں بلدیاتی انتخابات میں چیئرمین کے عہدے کے کانگریس امیدوار کے حق میں تقریر کرنے پہنچے سنے اداکار اور ممبر پارلیمنٹ راج ببر کا اپنی ہی پارٹی کے عہدیدار سے اسٹیج پر تکرار ہو گئی. انہوں نے ایس پی کے رہنما اور سابق وزیر اعظم خان کے خلاف کچھ بات کرنے سے انکار کر دیا. راج ببر نے پی ایم مودی اور بی جے پی کو رام نام رٹ لگانے والا اور راہل گاندھی کو رام نام لینے والے مہاتما گاندھی کی سوچ کو زندہ رکھنے و ...

Read more

بہادری کے ایوارڈس سے نوازے جانے والے افراد کی بیواؤں کے لئے بھتہ

نئی دہلی:وزارت دفاع کے 1972کے اعلان نامے اورپھر1995میں جاری کئے گئے اعلان نامے کے مطابق بہادری کے انعامات حاصل کرنے والوں کو یہ حق حاصل ہوتاہے کہ انھیں مالی بھتہ دیاجائے ۔ مالی بھتہ دینے کے لئے موجودہ شرائط کے مطابق یہ بھتہ صرف انعام یافتہ یااس کی موت کی صورت میں اس کی بیوہ کو ا یک مجاز تقریب میں دیاجائے گا۔ یہ بیوہ قانونی طورپر انعام یافتہ کے رشتہ ازدواج میں ہونی چاہئے ۔ یہ بھتہ بیوہ کو اس وقت تک ملتارہے گ ...

Read more

گجرات انتخابات : بی جے پی کے بعد کانگریس کی بھی مشکلیں بڑھیں ، پہلی لسٹ جاری ہوتے ہی ہاردک حامیوں کا ہنگامہ

سورت : گجرات اسمبلی انتخابات کو لے کر بی جے پی کے بعد اب کانگریس کی مشکلات بھی بڑھتی ہوئی نظر آرہی ہیں۔ اتوار کو دیر رات امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کرنے بعد سے ہی کانگریس اور ہاردک پٹیل کے حامیوں کے درمیان دراڑ پڑ جانے کی خبریں ہیں ۔ بتایا جارہا ہے ہے کہ ٹکٹوں کی تقسیم کو لے کر پاٹیدار انامت آندولن سمیتی پاس لیڈر ہاردک اور کانگریس کارکنان ک درمیان دیر رات تک سورت میں ہاتھا پائی چلتی ہے ۔ ہاردک حامیوں نے ک ...

Read more

سینئر کانگریس کے رہنما پریرانجن داسس مششی کا انتقال ۔کئی سال سے کوما میں تھے

نئی دہلی: سینئر کانگریس رہنما اور سابق وزیر پریرانجن داسس منشی کی وفات ہوئی. منشی 9 سال سےکوما میں تھے. پریا رنجن داس منشی یو پی اے -1 میں وزیر تھے. سن 2008 میں، سے وہ بیمار تھے وہ بول نہیں پا رہے تھے۔من موہن سگھ حکومت میں وہ انفارمیشن وزیر تھے۔ انکا دلی کے اپلو ہسپتال میں علاج کیا جا رہا تھا. منیرھن سنگھ حکومت میں پریا رنجن داس منشی اطلاعات و نشریات وزیر تھے. ڈاکٹر نے وضاحت کی ہے کہ لقوے کے حملے کے بعد، پر ...

Read more

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top