نائجیریا: مسجد میں دھماکہ، موذن کے سوا کوئی بھی زندہ نہیں بچا، 14 افراد شہید متعدد زخمی

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق کیمرون کی سرحد سے متصل نائجریا کے قصبے گمبورو کی مسجد میں عین اس وقت خودکش حملہ ہوا جب لوگ نماز فجر کی تیاری کررہے تھے۔

مقامی افراد کا کہنا ہے کہ دھماکے سے مسجد کو بری طرح نقصان پہنچا ہے اور مسجد میں موجود موذن کے علاوہ کوئی بھی شخص نہیں بچ سکا، ملبے سے اب تک 14 افراد کی لاشیں نکالی جاچکی ہیں اور مزید کئی افراد کے ملبے تلے دبے ہونے کا خدشہ ہے۔

 

لوگوں کا کہنا ہے کہ دھماکے سے کچھ دیر پہلے چار مشتبہ افراد کو دیکھا گیا تھا، علاقے کی نگرانی پر مامور افراد نے انہیں روکنے کی کوشش کی تو وہ بھاگ نکلے، پیچھا کرنے پر ایک پکڑا گیا، 2 اندھیرے کا فائدہ اٹھا کر فرار ہوگئے جب کہ ایک کو تلاش نہیں کیا جاسکا، خدشہ ہے کہ اسی نے مسجد پر خودکش حملہ کیا ہے۔

حملے کی ذمہ داری تاحال کسی نے قبول نہیں کی تاہم مقامی لوگوں اور حکام کا کہنا ہے کہ اس واقعے میں شدت پسند تنظیم بوکو حرام ہی ملوث ہے۔

واضح رہے کہ وہابی تکفیری دہشتگرد استعمار کے ایجنڈے پر عمل کرتے ہوئے صرف اسلامی ممالک کو ہی عدم استحکام پر تلے ہوئے ہیں جبکہ ان کا نعرہ ہے کہ وہ دنیا میں اسلامی نظام نافذ کرنا چاہتے ہیں۔

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top