كلبھوشن جادھو: سالوے سے ڈرا پاک، عالمی عدالت میں وکلاء کی نئی ٹیم کے ساتھ اترے گا

اسلام آباد: پاکستان مبینہ بھارتی جاسوس كلبھوشن جادھو مسئلہ میں بین الاقوامی عدالت (آئی سی جے) میں اپنا موقف مضبوطی سے رکھنے کے لئے وکلاء کی نئی ٹیم کا سہارا لے گا. پاکستان کے خارجہ امور کے مشیر سرتاج عزیز نے صحافیوں کو بتایا، کہ ‘پاکستان کے وکلاء نے عالمی عدالت میں جادھو مسئلہ میں اپنا موقف انتہائی مضبوطی سے رکھا.’

عالمی عدالت نے جادھو کی پھانسی پر آخری فیصلے تک روک لگا دی، جو اسلام آباد کے لئے دھکے کی طرح ہے. ریڈیو پاکستان کے مطابق، عزیز نے کہا کہ عالمی عدالت نے جادھو کو سفارتی رسائی فراہم کرنے کا حکم نہیں دیا ہے، بلکہ صرف اپنی رائے رکھی ہے.

جادھو کو سیاسی مشورہ دینے پر فیصلہ ابھی نہیں
جادھو کو جاسوسی اور دہشت گردی کے معاملے میں پاکستان کی ایک فوجی عدالت نے موت کی سزا سنائی ہے. عزیز نے کہا، کہ ‘جادھو کو سفارتی مشورہ دینے فراہم کرنے پر ابھی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے.’ انہوں نے کہا، ‘پاکستان کی حفاظت بہت سخت ہے اور ہمیں اپنی خودمختاری کے بنیادی حق کو برقرار رکھنا ہے.’

یہ بولے پاک وزیر دفاع
وہیں، پاکستان کے وزیر دفاع خواجہ آصف نے ‘پاکستان ٹوڈے’ کو بتایا کہ جادھو کا مسئلہ ملک کی سلامتی سے منسلک ہے اور اس سے کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا. وزیر نے کہا کہ تمام ضروری قانونی طریقہ کار مکمل کرنے کے بعد ہی ‘بھارتی جاسوس’ کو قصوروار ٹھہرایا گیا اور معاملے میں کوئی بھی فیصلہ قومی سلامتی کو ذہن میں رکھتے ہوئے کیا جائے گا. انہوں نے کہا، ‘عالمی عدالت نے جادھو کی موت کی سزا پر صرف رسمی روک لگائی ہے.’

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top