سابق وزیراعلی اکھیلش کہتے ہیں- اب خاندان میں کوئی جھگڑا نہیں ہے

لکھنو¿: سماج وادی پارٹی کے صدر اور یوپی کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو نے ہفتہ کو کہا کہ اب ان کے خاندان میں کوئی جھگڑا نہیں ہے اور وہ بار بار اپنے دوست نہیں بدلتے ہیں۔
ایک میڈیا گروپ کے پروگرام میں شرکت کرنے آئے اکھلیش یادو نے کہا کہ جھگڑا تبھی تک رہتا ہے جب تک کرسی رہتی ہے۔ کرسی چلا گئی، جھگڑا بھی چلا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ ایس پی کانگریس اتحاد جاری رہے گا. میں کبھی دوست نہیں بدلتا۔


نوٹ بندی پر اٹھائے جانے والے سوالات:
– انہوں ننوٹ بندی کے بارے میں کہا کہ ملک کے سابق وزیر خزانہ بھی نوٹ بندی کو غلط بتا رہے ہیں. ہم پوچھتے ہیں،نوٹ بندی سے کیا فائدہ اٹھائے گئے ہیں؟
– جی ایس ٹی پر اکھلیش نے کہا کہ ایک بار جی ایس ٹی نافذ ہونے کے بعد کئی بار ترمیم کئے گئے. آنے والے انتخابات تک کئی بار جی ایس ٹی میں ترمیم ہوگی. حکومت کو لگتا ہے کہ یہ جی ایس ایس خود کو مکمل طور سے واقف نہیں ہے.
اکھلیش یادو نے کہا کہ یہاں بیٹھ کر کاروبار نہیں بول سکتا کیونکہ اس کی انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ کا نوٹس آنے کا امکان ہے. لیکن تمام کیمرے کے پیچھے قبول کریں گے وہیں، مسلمان۔ یادوکے سوال پر سابق وزیر اعلی نے کہا کہ میں نے کبھی بھی نسل اور مذہب کی بنیاد پر ٹکٹ نہیں بانٹا. ایم آئی فیکٹر کے بارے میں کبھی بات نہیں کی.

سماج وادی پارٹی کی حکومت نے کئی اسکیمیں نافذ ہیںلیکن آج کی حکومت اس کا کریڈٹ نہیں دیتی ہے. جبکہ ایس پی کی حکومت نے مایاوتی کو ایکسپریس میں کریڈٹ دیا. اکھلیش یادو نے کہا کہ آنے والے وقت میں ہم لوگوں کے بارے میں بات کریں گے.

اکھلیش یادو نے کہا کہ لوگوں کو لگتا ہے کہ انتخابات کے دوران یہ مشین خراب ہوسکتی ہے. لوگ ابھی تک اس بات کو قبول کرنے میں قاصر ہیں کہ یہ شکست کیسے ہوئی ہے. انہوں نے کہا کہ یوپی کے لوگ اب سوچتے ہیں کہ ان کا اظہار ہوا ہے، جب بلیٹ ٹرین ہو گی؟

Leave a Comment

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top