بلدیاتی انتخابات میں عوام نے بڑی پارٹیوں کو اخلاقی سبق سکھایا: عام آدمی پارٹی

لکھنؤ: عام آدمی پارٹی ( اے اے پی ) نے آج دعوی کیا کہ اتر پردیش کے شہری بلدیاتی انتخابات میں عوام نے آزاد امیدواروں کو زیادہ حمایت دے کر اہم سیاسی پارٹیوں کو اخلاقی سبق پڑھادیا ہے ۔

 عام آدمی پارٹی کے ترجمان سنجے سنگھ نے یہاں صحافیوں سے کہا کہ بلدیاتی انتخابات میں بی جے پی کی شاندار جیت سے متعلق میڈیا رپورٹیں واقعی چھلاوا تھیں۔ صحیح معنوں میں آزاد امیدواروں نے و اس الیکشن میں ڈنکا بجا یا ہے ۔

 

ووٹروں نے کھلے دل سے آزاد امیدواروں کی حمایت کی اور ریاست میں ذات اور مذہب کی سیاست کرنے والی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)، سماج وادی پارٹی (ایس پی)، کانگریس اور بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کو سدھرنے کی نصیحت دی۔پارٹی کے امیدواروں کی جیت کے لیے عوام کا شکریہ ادا کرتے ہوئے مسٹر سنجے سنگھ نے کہا کہ دو نگر پنچایتوں میں صدر اور 42 وارڈو ں پر میونسپلٹی اور نگر پنچایت اراکین منتخب کرنے کے لئے ان کی پارٹی ریاست کے عوام کا شکریہ ادا کرتی ہے ۔

انہوں نے دعوی کیا کہ عام آدمی پارٹی ہمیشہ متبادل سیاست کو فروغ دیتی آئی ہے ۔ ریاست میں بلدیاتی انتخابات کے سخت مقابلے میں ان کی پارٹی نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور یہ ان کے لیے ایک اچھا اشارہ ہے ۔ ایس پی اور بی ایس کی طرح الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) کی معتبریت پر سوال کھڑے کرتے ہوئے عام آدمی پارٹی کے ترجمان نے کہا کہ میونسپل اور سٹی کونسل کے ان علاقوں میں بی جے پی کے زیادہ تر امیدوار شکست کھائے ہیں جہاں بیلیٹ پیپر کا استعمال ہوا۔ صرف انہی سیٹوں پر بی جے پی نے جیت درج کی جہاں ای وی ایم کا استعمال کیا گیا۔

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top