لالو یادو نے دیا مودی کو چیلنج، بولے- لوک سبھا تحلیل دوبارہ کروائیں عام انتخابات

پٹنہ ؛ بہار میں حکمران آر جے ڈی کے صدر لالو پرساد نے اتوار کو وزیر اعظم نریندر مودی کو چیلنج کیا کہ لوک سبھا تحلیل دوبارہ عام انتخابات کرائیں. لالو نے کہا کہ بی جے پی کی قیادت والی مرکزی حکومت گزشتہ تین سال میں تمام مورچو پر ناکام ثابت ہوئی ہے.

فائدہ عام لوگوں کو نہیں، صرف بی جے پی اور آر ایس ایس کو ہوا ہے. لالو نے یہاں میڈیا سے کہا، “مودی لوک سبھا تحلیل کریں اور کچھ ریاستوں میں ہونے والے اسمبلی انتخابات کے ساتھ نئے سرے سے عام انتخابات کرائیں، کیونکہ ان کی حکومت 2014 کے عام انتخابات سے پہلے کئے گئے وعدے پورے کرنے میں ناکام رہی ہے.”

لالو نے یہ مطالبہ بھی کی کہ مودی عوام کو اپنے اس وعدے کا جواب دیں، جس میں انہوں نے ہر سال دو کروڑ روزگار دینے کا وعدہ کیا تھا.

 

 

بہار کے سابق وزیر اعلی نے کہا، “ہر سال دو کروڑ لوگوں کو روزگار دینے کے ان کے وعدے کا کیا ہوا؟ بھارتیہ جنتا پارٹی کی قیادت والی مرکزی حکومت بتائے کہ مئی، 2014 کی طرف سے اب تک کتنے لوگوں کو روزگار دی گئیں؟ “

راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر نے کہا کہ مودی حکومت کو اس بارے میں بھی سرکاری اعداد و شمار پیش کرنا چاہئے کہ تین سال میں غیر ملکی بینکوں میں جمع کتنے کالے دھن ملک میں واپس لائے گئے.

 

 

لالو نے کہا، “بی جے پی کے ہاتھوں میں ملک محفوظ نہیں ہے، کیونکہ یہ پارٹی کسی بھی قیمت پر اقتدار میں بنے رہنے کے لئے سماج کو بانٹنے اور مختلف فرقوں کے درمیان نفرت پیدا کرنے میں لگی ہے. سب کا ساتھ، سب کا ترقی والے اس جملے کی حقیقت وہیں جانتا ہے، جس پر کی طرف جاتا ہے. “

سابق مرکزی وزیر نے کہا کہ بی جے پی ملک میں حقیقی سنگھواد، وفاقی ڈھانچے کو ختم کرنے پر آمادہ ہے. یہ پارٹی علاقائی پارٹیوں کو ختم کرنے کی ہر کوشش کر رہی ہے، جو جمہوریت کے لئے خطرناک ہے.

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top