یہ ضروری نہیں ہے کہ بڑے مجرم جیل بھیجے جائیں، انھیں بھیجیں جہاں وہ ہونا چاہئے: ؛ یوگی

وزیر اعلی یوگی ادیتھناتھ نے کہا ہے کہ ریاست میں مجرموں کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے. انہیں خطے کو چھوڑنے کے لئے مجبور کیا جانا چاہئے. انہوں نے یہ بھی حکم دیا کہ غیر قانونی غیر ملکی شہریوں کو سروے کرنے کے ذریعہ ریاست میں رہنا. ان کا ہدایت غیر قانونی بنگلہ دیشی اور روہنگیا مسلمانوں سے منسلک کیا جا رہا ہے. انہوں نے باقی 73 کمپنیوں کو پی اے سی کی طرف سے تعمیر کرنے کے لئے ہدایت کی.


چیف منسٹر نے بدھ کی شام کو لکھنؤ میں قانون و امان کا جائزہ لیا تھا. انہوں نے عوام کے ساتھ بات چیت کرنے کے لئے ہر روز پیڈ گشت کرنے کے لئے ایس جی ایس جی زونز کو ہدایت کی. وزیر اعلی نے کہا کہ ریاست میں قانون و امان کو بہتر بنانے کے لئے مجرموں کے خلاف سخت کارروائی کی جانی چاہیئے. تنوار میں مشتبہ افراد کی فہرست بنائیں اور مسلسل ان کی نگرانی کریں. انہوں نے کہا کہ دیوالی اور چھٹھ پوجا میں کوئی بھی ناخوشگوار واقعہ پیش آیا تو متعلقہ پولیس افسران کی ذمہ داری طے کرتے ہوئے ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی.
اضلاع کے ایس ایس پی ڈی ایم سے مشورہ کر میرٹ کی بنیاد پر تھانہ انچارجوں کی تعیناتی کریں اور نٹھللے، لاپرواہ اور بے حس تھانہ انچارج کو نشان زد کر باہر کا راستہ دکھائیں. وزیر اعلی نے پی اے سی کی 273 کمپنیوں میں سے افرادی قوت کی عدم موجودگی میں ختم کر دی گئی 73 کمپنیوں کو شیڈول طریقے سے جلد سے جلد دوبارہ سے منظم کرنے کی ہدایت بھی دیا.

یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ عام شہریوں کو بہتر ٹریفک کی سہولت فراہم کرنے کے لئے جلاوار ٹریفک پلان بنا کر کام کیا جائے.
انہوں نے کہا کہ مکانات میں چلنے والے آتشبازی کی دکانوں اور گوداموں کو کام کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے. دیگر ریاستوں کے سرحدی اضلاع پر وسیع نگرانی کے ذریعے شکایات کے غیر قانونی انفیکشن پر نظر رکھنا، جامع تحقیقاتی مہم شروع کی جانی چاہیئے. جیل میں بند مجرموں پر بھی کڑی نظر رکھی جائے تاکہ وہ جیل میں رہ کر کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کو انجام نہ دینے پائیں.

وزیر اعلی نے غیر قانونی کان کنی، غیر قانونی اسمگلنگ اور جانوروں کی اسمگلنگ روکنے اور کارروائی کرنے کے لئے مہم کو روکنے کے لئے ہدایت کی. تین گھنٹے تک جاری رہی اس اجلاس میں چیف سکریٹری راجیو کمار، پرنسپل سکریٹری داخلہ اروند کمار، ڈی جی پی سلكھان سنگھ، سیکرٹری چیف مرتيجي کمار نارائن اور سیکرٹری داخلہ منی پرساد مشرا سمیت کئی سینئر افسران موجود تھے.

Leave a Comment

Copyright © Dailyaag - All Rights Reserved

Scroll to top